ہمارے ایک مشہور سائنس دال 1905ء میں جب برطانوی حکومت نے بنگال کو مشرقی اور مغربی دو حصوں میں بانا تو لوگ بلبلا اٹھے۔ اسکول میں پڑھنے والے بارہ سال کے ایک لڑکے میلے ناسا کو جتناغصہ آیا اتا شاید اور سی کونہیں آیا۔ بنگال کو ایک کرانے کی جدوجہد کرنے والے انقلا بی نوجوانوں کے جو جھے بن رہے تھے ان میں شامل ہونے کے لیے میگھناد کی عمر بہت کم تھی۔ اس لیے انھیں اپنے غم و غلے کے اظہار کے لیے کوئی اور طریقہ اختیار کرنا تھا۔ انھیں ایسا موقع اس وقت مل سکا جب یہ اعلان ہوا کہ بنگال کا ایک گورنز ان کا اسکول دیکھنے آرہا ہے۔ اس تخت تاکید کے باوجود کہ گورنر کے استقبال کے لیے ہر بچے کو موجود ہونا چاہیے، ساہا اور ان کے کچھ دوست اس دن اسکول نہیں آئے جس دن گورکو آنا تھا۔ اگلے دن سا ہا اور ان کے دوستوں کے نام اسکول کے رجسٹر سے کاٹ دیے گئے ۔ ساہا کو اپنے دوستوں سے زیادہ قیمت چکانی پڑی کیونکہ انھیں اس وظیفے سے بھی ہاتھ دھونا پڑا جو انھیں چند مہینے پہلے ملنا شروع ہوا تھا۔ ایک مشہور و معروف سائنس داں بن جانے کے بعد بھی وطن پرستی اور قربانی کا یہ جذبہ ان میں موجود رہا۔ وطن سے محبت نے انھیں قوم کا معمار بھی بنا دیا۔ انھوں نے آزاد ہندوستان میں صرف سائنس کا مرتبہ اونچا کرنے کی کوشش کی بلکہ وہ غریبوں کی بھلائی کے لیے بھی کام کرتے رہے۔ ساها 6 اکتوبر 1893 ء کوسبیورا تالی ضلع ڈھاکا میں پیدا ہوئے جو اب بنگلہ دیش میں ہے۔ ان کے والد کی ایک معمولی سی پر چون کی دکان تھی جس سے گھر کا خرچ مشکل سے نکلتا تھا۔ اس لیے وہ چاہتے تھے کہ ان کا پانچواں بچہ میگھنا بچپن سے ہی گھر کے لیے کچھ کھانا شروع کر دے۔ لیکن میکھناد کے استادوں نے اصرار کیا کہ وہ میگھ ناد تعلیم ضرور دلائیں کیونکہ وہ بہت ہونہار اور ذہین طالب علم تھے۔ آخر کا وں سے گیارہ میل دور ایک بورڈنگ اسکول میں میں داخل کرا دیا گیا۔ 108 اپنی زبان کاری کی تھیم مکمل کرنے کے بعد ساب کلکتہ یونیورسٹی کے سائنس کابل میں فورکس کے کچھر ہو گئے۔ یہاں انھوں نے فرس کے موضوعات پر بہت سی کتابیں پڑھیں اور نھیں اچھی طرح پڑھایا بھی۔ پڑھانے کے لیے اپنی پرتوش تیار کرتے ہوئے ان کے سامنے ایسٹروفزکس کا ایک مسئلہ آیا۔ اسی مسئلے کو حل کرنے کی وجہ سے وہ دنیا بھر میں مشہور ہو گئے ۔ ”ایسٹروفزکس، ستاروں کی نوعیت ، ان کی گرمی ، ان کی اندرونی بناوٹ اور کن کن چیزوں سے مل کر وہ بنے ہیں وغیرہ کا مطالعہ کرتی ہے۔ ساہا کی عمر اس وقت مشکل سے 25 سال تھی ۔ سائنسی دنیا نے ان کے کام کو بہت سراہا۔ سراہا ایک ساتی کارکن بھی تھے۔ انھوں نے خود بھی غریبی کے دن دیکھے تھے، اس لیے انھیں ملک کے غریب لوگوں کا ہمیشہ دھیان رہتا تھا۔ جب ملک تقسیم ہوا اور مشرقی بنگال سے لوگ بھاگ بھاگ کر ادھر آنے لگے تو ان کو آباد کرانے میں ساہانے بہت کام کیے۔ بچپن میں اپنے علاقے کے سیلاب زدہ لوگوں کو راحت پہنچانے کے کام میں شریک رہنا بھی انھیں ہمیشہ یاد رہا۔ انھوں نے غور کیا کہ سیلاب کیوں اور کیسے آتے ہیں اور ان پر کیسے قابو پایا جاسکتا ہے۔ اس کے لیے بہت سے دریاوں کی وادیوں کے بارے میں انھوں نے کئی منصوبے تجویز کیے۔ 16 فروری 1956ء کو ان کا انتقال ہوا۔ معیار برطانوی حکومت : انگریزی حکومت بلبلا اٹھنا (محاورہ) : بہت زیادہ خطے میں آجانا ، شدید تکلیف محسوس کرنا : جنھا کی مجمع گروہ اظہار : ظاہر کرنا اختیار کرنا : اپنانا : صوبے کا سب سے بڑا حاکم : علم، اصرار، بار بار کہنا گورز منا کی 109 وطن پرستی ہمارے ایک مشہور سائنس داں وظیفه : اسکالرشپ ، وہ تم جو اچھے اور ذہین بچوں کوتعلیم کے لیے ملتی ہے۔ قیمت چکانا محاورہ) : نقصان برداشت کرنا، بدلہ چکانا ہاتھ دھونا محاورہ) : کسی چیز سے محروم ہونا : اپنے وطن سے محبت کرنا معمار : تعمیر کرنے والا ، بنانے والا پرچون کی دکان : عام ضرورت کی چیزوں کی دکان چار چیزوں کی دکان : عقل مند، ہین اصرار کرنا : اسی بات پر زور دینا بورڈنگ اسکول : وہ اسکول جہاں بچوں کے رہنے اور کھانے کا انتظام ہو موضوعات : موضوع کی جمع مضمون : پیشانی، بھن • .. .. ہونہار نوعیت سراہا سماجی کارکن : پسند کیا تعریف کی : جوسماج کی بھلائی کے لیے کام کرے : بؤاره : سیلاب کا مارا ہوا : پان،خا کہ سیلاب زده مصوب سو چھے اور بتای 1. بنگال کو برطانوی حکومت نے کب اور کتے حصوں میں تقسیم کیاتھا؟ 2. انگریز گورنر کی آمد پیگھنا سا اور ان کے دوستوں نے اپنے غم و غت کا اظہمارکس طرح کیا؟ 110 اپنی زبان یورپی یونین میں مشہور ہو گی؟ 3. میگھنا سا کا وظیفہ کیوں بند ہو گیا تھا؟ 4. میگھنا ساہو کے والد نھیں کیوں نہیں پڑھانا چاہتے تھے؟ میگھنا ساہا کا نام دنیا بھر میں کس کام کی وجہ سے مشہور ہوا؟ میگھنا ساہا کے استادوں نے ان کی تعلیم کو جاری رکھنے کی کیا وجہ بتائی؟ 7. تعلیم مل کرنے کے بعد میگھنا سابافرکس کے کچر کہاں مقرر ہوئے؟ 8. الیسٹروفزکس میں کن چیزوں کا مطالعہ کیا جاتا ہے؟ 9. سائنس کے میدان میں کام کرنے کے علاوہ میگھنا ساہانے اور کیا کیا ہم کام کیے؟ دیے ہوئے الفاظ و جملوں میں استمال کبھیے ان پر ہونہار معلم نوعیت موضوع منصوبہ واحد سے جمع اوریع سے واحد بٹایئے حکومت حصوں مواقع وست مینیں قربانی اقوام استادوں ان لفظوں کے مضاکھے نوجوان دوست آزاد بھلائی محبت اندرونی گری حضو) استعاروں غور کرنے کی بات و انقلاب کے لفظی معنی ہیں بہت بڑی تبدیلی یاکسی چیز کا پوری طرح بدل جانا۔ انقلابی وہ شخص کہلاتا ہے جو انقلاب لانے میں زور وشور کے ساتھ شریک ہو۔ اس لیے ہندوستان کو انگریزوں کی غلامی سے آزاد کرانے کی جدوجہد میں جولوگ پوری طاقت کے ساتھ شریک تھے۔ اور ہندوستان کو آزادیکھنا چاہتے تھے انھیں انقلاب کہا جاتا ہے۔

RELOAD if chapter isn't visible.