| اشیا کو گروپوں میں چھانٹنا | (Sorting Materials into Groups) 4 . 1 مارے اطراف کی چیزیں ہم دیکھتے ہیں کہ ہماری غذا اور کپڑوں کی مختلف قسمیں ہیں۔ صرف کپڑے اور غذا ہی نہیں بلکہ ہر جگہ مختلف قسم کی چیز ہیں موجود ہیں۔ ہم اپنے چاروں طرف کری، بیل گاڑی، سائیکل، کھانے پکانے کے برتن، کتابیں، کھلونے، پانی، پھر اور دیگر بہت سی چیزیں دیکھتے ہیں۔ یہ بھی چیز میں مختلف شکل اور رنگوں کی ہوتی ہیں نیز ان کے استعال بھی مختلف ہیں (شکل 4 . 1)۔ بال اور کچے شامل ہو سکتے ہیں۔ اگر ہم اپنی فہرست میں ان اشیا کو بھی شامل کر لیں جو تقریبا گول ہیں تو ہماری فہرست میں سیب ، سنترے اور مٹی کا گھڑا بھی شامل ہوسکتا ہے۔ فرض تھے کہ ہم ان چیزوں پر غور کر رہے ہیں جو خوردنی ہیں تو ہم اپنی فہرست میں ان سبھی اشیا کو شامل کر سکتے ہیں جو باب 1 کی جدول 1 . 2 ، 1 . 1 اور 1 . 3 میں درج ہیں۔ ہم یہ بھی دیکھ سکتے ہیں کہ گول اشیا کی جو فہرست ہم نے تیار کی ہے ان میں سے کچھ اشیا اس خوردنی اشیا کی فہرست میں شامل ہوسکتی ہیں۔ آیئے ان اشیا کا گروپ تشکیل دیتے ہیں جو کہ پلاسٹک سے بنی ہوتی ہیں۔ بالٹیاں، ناشتہ دان، کھلونے، پانی کے برتن، پائپ اور اس قسم کی دیگر کئی چیزیں اس گروپ میں شامل کی جاسکتی ہیں۔ اشیا کو گروپوں میں رکھنے کے کئی طریقے ہیں۔ مذکورہ بالا مثالوں میں ہم نے اشیا کی گروپ بندی ان کی شکل یا ان مادوں کی بنیاد پر کی ہے جن سے ہی اشیا بنی ہیں۔ ہمارے اطراف میں موجود بھی چیز میں ایک یا زیادہ مادوں سے مل کر بنی ہوتی ہیں۔ یہ مادے کا، دهات، پلاسٹک ، لکڑی، کپاس، کاغذ مٹی وغیرہ ہو سکتے ہیں۔ کیا آپ مادوں کی کچھ اور مثالوں پر غور کر سکتے ہیں؟ شکل 4 . 1 همارے اطراف کی چیزیں اپنے اطراف میں دیکھے اور ان اشیا کی شناخت کے جن کی شکل گول ہے۔ ہماری فہرست میں ربر کی گیند، فٹ عملیام1 جدول 4 . 1 اشیا اور وہ مادے جن سے یہ اشیا بنی ہیں وہ مادے جن سے یہ اشیا بنی ہیں | اشیا | اسٹیل کانچ، پلاستیک (دیگر) پیٹ (تعالی) پلاسٹک ، دهات آیئے ہم اپنے اطراف میں موجود زیادہ سے زیادہ چیزیں بیع کرتے ہیں۔ ہم میں سے ہر ایک اپنے گھر ، کلاس روم یا اسکول کے باہر سے روز مرہ کی کچھ اشیا کو جمع کرسکتا ہے۔ ہم نے کون کون سی اشیا جمع کی ہیں؟ چاک، پل، کاپی، ربر، ڈسٹر، تھوڑا کیل، صابن، پیسے کی تیلی، بلا، ماچس کی ڈبیہ، نمک، آلو! ہم ان چیزوں کو بھی فہرست میں شامل کر سکتے ہیں جنھیں ہم کلاس میں نہیں لا سکتے ہیں مگر ان کے بارے میں سوچ سکتے ہیں۔ - مثال کے طور پر دیواره درخت دروازے ٹریکٹر، سڑک۔ اشیا کے مجموعے میں سے ان چیزوں کو علیحدہ کجھے جو جو کاغذ یا لکڑی سے بنی ہیں۔ اس طریقے سے ہم نے اشیا کو دو گروپوں میں تقسیم کردیا ہے۔ ایک گروپ میں ہم نے ان تمام اشیا کو شامل کیا ہے جو کاغذ یا لکڑی سے بنی ہیں اور دوسرے گروپ میں ان اشیا کو شامل کیا ہے جو ان مادوں سے نہیں بنی ہیں۔ اس طرح سے ہم ان اشیا کو علیحدہ کر سکتے ہیں جن کا استعمال غذا تیار کرنے میں کیا جاتا ہے۔ آیئے اپنے کام کو اور منظم طریقے سے کرتے ہیں۔ جمع کی گئی بھی اشیا کو جدول 4 . 1 میں درج کیے۔ ہر ایک شے جن مادوں سے بنی ہے ان کی شناخت کیے جنت ممکن ہو سکے زیادہ سے زیادہ اشیا کے بارے میں جانکاری حاصل کیے اور ایک بڑی جدول تیار کیجیے۔ اس میں آپ کو بڑا مزہ آئے گا۔ ان میں سے کچھ اشیا کے بارے میں یہ پتہ لگانا کہ وہ کن مادوں سے بنی ہیں، مشکل ہوسکتا ہے۔ اس طرح کے معاملوں میں مادوں کی شناخت کے لیے اپنے اساتذہ، دوستوں اور والدین سے بات کیجیے۔ عملی کام 2 جدول 4 . 2 میں کچھ عام مادوں کی فہرست دی ہوئی ہے۔ . آپ کالم میں ایسے کچھ اور مادوں کو شامل کر سکتے ہیں جنہیں آپ جانتے ہیں۔ اب روز مرہ کے استعمال کی ان چیزوں و کے بارے میں سوچے جنہیں آپ جانتے ہیں اور جو ان مادوں سے بنی ہیں، انہیں کالم میں تھے۔ جدول 4 . 2 ایک ہی مادے سے بنی مختلف اشیا | ماده | ان مادوں سے بنی اشیا لکڑی کرسی، چیز، بیل، بیل گاڑی اور اس کے پیسے کاغذ | کتابیں، کاپیاں، اخبار ، کھلونے، کیلنڈر پراسیک | | کپاس کوالا را پڑتا ہے کہ کیا میں ایسے مادوں کے پارس مشن پر ہے جن کا استيرال آی سی و زیار و اشیا اتنے میں کیا جاتا ہے۔ * 32 سائنس ان جدولوں سے ہمیں کیا حاصل ہوتا ہے؟ سب سے پہلے ہم نے اشیا کی مختلف طریقوں سے گروپ بندی کی۔ اس کے بعد ہم نے دیکھا کہ ہمارے اطراف میں موجود اشیا مختلف مادوں سے بھی ہیں۔ کبھی تو کوئی شے ایک ہی مادے سے بنی ہے اور بھی ایک نے کئی مادوں سے بھی بنی ہوسکتی ہے۔ مزید یہ کہ ایک مادے کا استعمال مختلف قسم کی اشیا بنانے میں کیا جاسکتا ہے۔ اس بات کا تعین کیسے کیا جاتا ہے کہ کسی دی ہوئی شے کو بنانے کے لیے کس قسم کے مادے کا استعمال کیا جائے گا؟ ایسا لگتا ہے کہ میں مختلف مادوں کے بارے میں اور زیادہ جانکاری حاصل کرنے کی ضرورت ہے۔ 4 . 2 مادوں کی خصوصیات (Properties of Materials) کیا آپ نے بھی اس بات کو جاننے کی کوشش کی ہے کہ برتن بنانے کے لیے کپڑے کا استعمال کیوں نہیں کیا جاتا؟ باب میں کپڑے کے ٹکڑے کے ساتھ کیے گئے تجربے کو یاد کیجے اور اس بات کو بھی ذہن میں رکھے کہ برتن کا استعمال عموما رقیق شے کو رکھنے کے لیے کیا جاتا ہے۔ اس لیے، کیا یہ بیوقوفی نہیں ہوگی کہ ہم برتن کو بنانے کے لیے کپڑے کا استعمال کریں (شکل 4 . 2)۔ ہمیں برتن بنانے کے لیے کارچ، پلاستیک، دھات یا اسی قسم کے دیگر مادے درکار ہوں گے جو اپنے اندر پانی کو روک سکیں۔ اسی طرح کھانا پکانے کے برتنوں کو بنانے کے لیے کاغذ جیسے مادوں کا استعمال بھی عقلمندی کی بات نہیں ہے۔ اشیا کو گروپوں میں چھانٹنا شکل 4 . 2 کپڑے کا برتن استعمال کرنا اس طرح ہم دیکھتے ہیں کہ کسی شے کو بنانے کے لئے مادے کا انتخاب اس کی خصوصیات اور اس مقصد پرمنحصر ہوتا ہے جس کے لیے شے کو بتایا جاتا ہے۔ اس لیے مادوں کی وہ تمام خصوصیات کون کون سی ہیں جو ان کے استعمال کے لیے اہم ہیں؟ کچھ خصوصیات پر ذیل میں بحث کیے۔ ظاہری بناوٹ (Appearance | مادے عام طور پر ایک دوسرے سے مختلف نظر آتے ہیں۔ لکڑی، لوہے سے بالکل مختلف دکھائی دیتی ہے۔ لوہا، تانبہ یا ایلومینیم سے مختلف نظر آتا ہے۔ ساتھ ہی ساتھ لوہا، تانبہ اور ایلیوٹیم میں کچھ یکسانیت ہوسکتی ہے جو کہ لکڑی میں نہیں ہے۔ لیکام 3 مختلف مادوں کے کچھ ٹکڑے جمع کیے۔ کاغذ، کارڈ بورڈ، لکڑی، تانبہ کا تار، ایلیو نیم شیٹ، پاک۔ کیا یہ بھی چپکدار نظر آتے ہیں؟ پچکدار مادوں کو ایک علیحدہ گروپ میں رکھے۔ 33 ورکشاپ پر جائیں تو دھاتی چھڑوں کی تازہ کٹی ہوئی سطحوں کا مشاہدہ کیسے اور دیکھیے کہ کیا وہ چمکدار ہیں؟ اب جیسے ہی آپ کے استاد محترم ہر ایک مادے کو دو کڑوں میں کاٹتے ہیں تو اس کا مشاہدہ کیجیے اور تازہ کٹی ہوئی اس کو دیکھے (شکل 4 . 3)۔ آپ کیا دیکھتے ہیں؟ کیا ان میں سے کچھ مادوں کی تازہ کٹی ہوئی مٹ چکدار نظر آتی ہے؟ ان مادوں کو بھی چمکدار اشیا کے گروپ میں شامل کیے۔ شكل 4 . 3 اشیا کے ٹکڑوں کو کاٹنا تاکه یه معلوم هو سکے که و کیا یه چمکدار هیں کیا آپ کو اس ستم کی چک کچھ اور مادوں میں بھی نظر - آتی ہے، انہیں کاٹ کر دیکھے جس طرح بھی آپ کاٹ سکتے ہوں؟ اس کام کو اپنی کلاس میں زیادہ سے زیادہ مادوں کے ساتھ دہرائے اور پکدار اشیا کی فہرست بنائے نیز ان اشیا کی بھی جو چمکدار نہیں ہیں۔ کاٹنے کے بجائے آپ مادوں کی من کوریگمال سے بھی رگڑ سکتے ہیں تا کہ یہ معلوم ہو سکے کہ یہ - چمکدار ہے یا نہیں۔ وہ مادے جن میں اس قسم کی چک ہونی ہے عموما دهات ہوتے ہیں۔ لوہا، تانبہ، الیوم اور سونا دھاتوں کی مثالیں ہیں۔ کچھ دھاتیں عام طور سے اپنی چمک کھو دیتی ہیں اور پھیکی پڑ جاتی ہیں۔ ایمان کے اوپر ہوا اور پانی کے عمل کی وجہ سے ہوتا ہے۔ اسی لیے ہمیں ان کی تازہ کٹی ہوئی سطح پر ہی چک نظر آتی ہے۔ جب آپ کسی لوہار کے یہاں کیا کسی تخت پن (Hardness) جب آپ اپنے ہاتھوں سے مختلف مادوں کو دباتے ہیں تو ان میں سے کچھ مادے سخت ہو سکتے ہیں جبکہ کچھ مادوں کو آسانی سے دیا جاسکتا ہے۔ ایک دھاتی چابی پیچھے اور اس سے لکڑی کے ٹکڑے ، ایلینیم، پتھر کے ٹکڑے، کیل، موم بتی پاک یا کسی اور مادے یا شے کی اس کو کھرچنے کی کوشش تھے۔ کچھ مادوں کو تو آپ بڑی آسانی سے کھرچ سکتے ہیں جبکہ کچھ مادوں کو آسانی سے نہیں کھرچ سکتے۔ وہ مادے جنھیں آسانی سے کھرچ سکتے ہیں یا دبا سکتے ہیں ملائم (Sof) کہلاتے ہیں جبکہ کچھ مادے جنھیں آسانی سے نہیں دبایا جاسکتا سخت (Hard) کہلاتے ہیں۔ مثال کے طور پر کپاس یا این ملائم مادے ہیں اور لوہا تخت مادہ ہے۔ ظاہری طور پر مادے مختلف خصوصیات کے حامل ہوتے ہیں مثلا چیک سخت پن، چکنے یا کھردرے۔ کیا آپ کچھ اور ایسی خصوصیات کے بارے میں سوچ سکتے ہیں جو کسی مادے کی ظاہری بناوٹ کو بیان کرسکیں؟ حل پزیر اور غیرعمل پڑی (Soluble or Insoluble) عما کام4 چینی، نمک، چاک پاؤڈر، ریت اور لکڑی کا برادا جیسی کچھ ٹھوس اشیا کے نمونے جمع کیے۔ پانچ گلاس یا بیکر پیچھے۔ ہر 34 ساتنه ایک کے دو تہائی حصے میں پانی بھر لیے۔ پہلے گلاس میں ایک چی چینی ملایئے دوسرے میں نمک اور اسی طرح دیگر اشیا کی تھوڑی تھوڑی مقدار دوسرے گلاسوں میں ملائے۔ ہر ایک گلاس کے اجزاء کو چھیے کی مدد سے اچھی طرح ہلائے۔ پانچ منٹ تک انتظار کیجیے۔ مشاہدہ کیجیے کہ پانی میں ملائی گئی اشیا کا کیا ہوتا ہے (شکل 4 . 4 )۔ اپنے مشاہدات کو جدول 4 . 3 میں لکھئے ۔ شکل 4 . 4 كيا غائب هوا ، کیا نهیں؟ پانی ہمارے جسم کے افعال میں اہم کردار ادا کرتا ہے کیونکہ یہ بہت سی اشیا کو اپنے اندر گھول لیتا ہے۔ کیا رقیق اشیا بھی پانی میں حل ہوجاتی ہیں؟ عمل می سرکا، نیپو کارس، سرسوں کا تیل یا ناریل کا تیل، مٹی کا تیل کوئی اور رقیق شے کے نمونے جمع کیے۔ اب کانچ کا برتن لیے۔ اسے نصف حصے تک پانی سے بھر پیچھے۔ چند پیچھے کسی ایک رقیق شے کے اس میں ملائے اور اچھی طرح سے ہلائے۔ اسے پانچ منٹ کے لیے ایسے ہی رہنے دیجیے۔ مشاہدہ کیجیے کہ آیا رقیق شئے پانی میں حل ہو جاتی ہیں (شکل 4 . 5)۔ اس عمل کو ان بھی رقیق اشیا کے ساتھ دہرایئے جو آپ کو دستیاب ہوں۔ اپنے مشاہدات کو جدول 4 . 4 میں تھے۔ جدول 4 . 4 کچھ عام رقیق اشیا کی پانی میں حل پذیری و رقیق | اچھی طرح گھل جاتا ہے انہیں گھلتا ہے | سر کا اچھی طرح گھل جاتا ہے | نیو کا رس | سرسوں کا تیل ناریل کا تیل | | مٹی کا تیل ل ہم دیکھتے ہیں کہ کچھ رقیق اشیا پانی میں اچھی طرح گل جاتی ہیں جبکہ کچھ اشیا پانی میں نہیں مل پاتی ہیں اور جب انہیں کچھ دیر کے لیے رکھ دیا جاتا ہے تو وہ ایک علیحدہ پرت جدول 4 . 3 پانی میں مختلف ھوں اشیا کی آمیزش اشیا پانی میں غائب ہو جاتی ہیں غائب نہیں ہوتیں | پانی میں مکمل طور سے غائب ہو جاتا ہے نمک ناریل کا تیل چاک پاؤڈر لکڑی کا برادا آپ دیکھیں گے کہ کچھ اشیا پانی میں مکمل طور سے غائب ہوجاتی ہیں لینی حل ہوجاتی ہیں۔ ہم کہتے ہیں کہ یہ اشیا پانی میں حل پذیر ہیں۔ دیگر اشیا پانی میں حل نہیں ہو پاتیں یہاں تک کہ ہم انہیں کافی دیر تک ہلاتے ہیں۔ یہ اشیا پانی میں غیرمل پذیر ہیں۔ اشیا کو گروپوں میں چھانٹنا بنا لیتی ہیں۔ 35 ) . ، ، کیا ہوگا؟ پانی میں حل نہ ہونے والی اشیا میں سے کچھ پانی کی پر تیرتی رہتی ہیں اور کچھ اشیا برتن کے پیارے پر بیٹھ جاتی ہیں۔ ٹھیک ہے؟ ہم نے بہت سی ایسی اشیا کی مثالوں پر غور کیا ہے جو پانی میں تیرتی ہیں یا ڈوب جاتی ہیں (شکل 4 . 6)۔ کسی شکل 4 . 5 (a) کچھ رقیق اشیا پانی میں اچھی طرح حل هو تالاب کی س یر گری ہوئی خشک پتیاں، وہ پتھر جسے آپ نے جاتی هیں جبکه (b) دیگر کچھ اشیا حل نهیں هوتیں اس تالاب میں پھینکا ہے، شہد کے چند قطرے جو آپ نے پانی کے گلاس میں پائے ہیں۔ ان بھی چیزوں کا کیا ہوتا ہے؟ بوجھوکی تجویز ہے کہ ملی کام میں استعمال کی کال گئی رقت اشیا کے لیے ہم اس بات کی بھی جا کر سکتے ہیں کہ کیا یہ اشیا پانی کے علاوہ بھی کسی اور رقیق شے میں اچھی طرح حل ہو جاتی ہیں۔ ہیں یہ جاننا چاہتی ہے کہ کیا کہیں بھی پانی میں حل ہو جاتی ہیں۔ شکل 4 . 6 کچھ اشیا پانی میں تیرتی هیں جبکه کچھ ڈوب جاتی هیں کچھ گھی میں پانی میں حل پذیر ہوتی ہیں جبکہ کچھ مل شفافیت (Transparency) پذیری نہیں ہوتیں۔ پانی میں عموما گیسیں بھی تھوڑی بہت شاید آپ نے چور سپاہی کا کھیل ضرور کیا ہوگا۔ ذرا ان جگہوں مقدار میں ملتی رہتی ہیں مثال کے طور پر پانی میں گھلی ہوئی کے بارے میں سوچے جہاں آپ چھپنے کی کو کیا کرتے تھے تا کہ دوسروں کو نظر نہ آسکیں۔ آپ نے ان جگہوں کا آکسیجن گیس پانی میں رہنے والے پودوں اور جانوروں کے انتخاب کیوں کیا؟ کیا آپ ی نے کسی کان کی لکڑی کے پیچھے زندہ رہنے کے لیے بہت اہم ہے۔ چھپنے کی کوشش کی ہوگی ؟ یقینا نہیں، کیونکہ آپ کے دوست اس اشیا پانی میں درست ہیں یا ڈوب جان ہیں Objects) کے بارے میں دیکھ سکتے ہیں اور آپ کو پڑ سکتے ہیں ۔ کیا آپ (may float or sink in water سبھی اشیا کے آر پار دیکھ سکتے ہیں؟ وہ اشیا جن کے آر پار کی عملی کام کو انجام دیتے وقت شاید آپ نے نوٹ کیا ہوگا کہ چیزوں کو دیکھ سکتے ہیں شفاف (Transparent) کہلاتی غیرعمل پذبیٹوں اشیا پانی سے علیحدہ ہوگئی تھیں۔ آپ نے اس ہیں (شکل 4 . 7)۔ کانچ، پانی، ہوا اور کچھ پلاسٹک شفاف بات کا مشاہدہ ملی کام 5 میں بھی کچھ رقیق اشیا کے معاملے میں مادوں کی مثالیں ہیں۔ دکاندار عام طور سے بسکٹ، مٹھائیوں 36 سائنس اور دیگر خوردنی اشیا کو کاری یا پلاسٹک کے ڈبوں میں رکھتے ہیں تا کہ گا کہ انہیں آسانی سے دیکھ لیں (شکل 4 . 8)۔ الله شکل 4 . 7 غیر شفاف شفاف اور نیم شفاف چیزوں کے پار دیکھنا عملی کام6 کاغذ کی ایک شیٹ پینے اور اسے روشن باب کے سامنے کر کے اس کے آر پار دیکھیے ۔ اپنے مشاہدے کونوٹ کیجیے۔ اب اس شیٹ پر تیل کی 2 . 3 بوند میں ڈال کر پھیلا د یے۔ جس حصے پر تیل لگایا گیا ہے اسے روشن بلب کے سامنے کر کے اس کے آر پار دیکھیے۔ کیا آپ کو بلب پہلے سے زیادہ واضح نظر آرہا ہے؟ کیا اس کے دوسری جانب بھی ہوئی تمام چیزیں نظر آرہی ہیں؟ شاید نہیں۔ وہ مادے جن کے آر پار چیزوں کو دیکھا تو جاسکتا ہے لیکن واضح طور پر انہیں، نیم شفاف (Transluent) کہلاتے ہیں۔ کاغذ کے اوپر تیل کے دھبوں کو یاد ہے جب ہم نے غذائی اشیا میں چربی کی موجودگی کی جانچ کی تھی؟ اس طرح ہم اشیا کی گروپ بندی شفاف، غیر شفاف اور نیم شفاف کے تحت کر سکتے ہیں۔ شكل 4 . 9 کیا ٹارچ کی و پیلی کی ایک تجویز ہے روشنی آپ کی تھیلی میں کہ کسی اندھیرے کمرے میں سے هو کر گزرتی هے؟ ٹارچ کے شیشے کو فیملی سے ڈھک ھے۔ ٹارچ کا بٹن دبائے اور تھیلی کے دوسرے جانب دیکھیے۔ وہ یہ جانا چاہتی ہے کہ آپ کی عقیلی غیر شفاف ہے، شفاف ہے یا پھر نیم شفاف ہے؟ ہم نے سیکھا کہ مادوں کی ظاہری بناوٹ ایک دوسرے سے مختلف ہوتی ہے۔ وہ اس اعتبار سے بھی ایک دوسرے شکل 4 . 8 دکان میں شفاف بوتلیں اس کے برس کچھ ایسے مادے بھی ہیں جن کے آریار آپ دیکھ نہیں سکتے۔ یہ مادے غیر شفاف (Opaque) کہلاتے ہیں۔ آپ ہی نہیں بتا سکتے کہ لکڑی کے بند صندوق گتے کے ڈبے یا دھاتی برتن کے اندر کیا رکھا ہوا ہے۔ لکڑی، گیا اور دھاتیں غیر شفاف مادوں کی مثالیں ہیں۔ کیا ہم نے دیکھا کہ ہم تمام مادوں اور اشیا کو بغیرکسی انجمن کے شفاف یا غیر شفاف مادوں کے گروپ میں رکھ سکتے ہیں۔ اشیا کو گروپوں میں چھانٹنا 37 سے مختلف ہوتے ہیں کہ آیا وہ پانی یا کسی اور رقیق میں حل پزیر ہیں یا نہیں۔ وہ پانی میں تیر سکتے ہیں یا ڈوب سکتے ہیں اور شفاف، غیر شفاف یا نیم شفاف ہو سکتے ہیں۔ مادوں کی گروپ بندی ان کی خصوصیات میں یکسانیت اور فرق کی بنیاد پر کی جاسکتی ہے۔ میں اشیا کی گروپ بندی کرنے کی ضرورت کیوں پیش آتی ہے؟ روز مرہ کی زندگی میں ہم عموما اپنی سہولت کے اعتبار سے اشیا کی گروپ بندی کرتے ہیں۔ گھر میں ہم عام طور سے اشیا کو اس انداز سے اسٹور کرتے ہیں کہ یکساں اشیا کو ایک ساتھ رکھا جاتا ہے۔ ایسا کرنے سے ہمیں اشیا کا اپنے لگانے میں آسانی ہو جاتی ہے۔ اسی طرح ایک پنساری اپنی دکان میں ایک ہی قسم کے بسکٹوں کو ایک طرف، تمام صابن دوسری طرف اور اناج نیز دالیں کسی دوسری جگہ رکھتا ہے۔ گروپ بندی کے فائدے کی ایک اور وجہ بھی ہے۔ مادوں کو گروپوں میں تقسیم کر دینے سے ان کی خصوصیات کا مطالعہ ہمارے لیے آسان ہوجاتا ہے نیز ان خصوصیات میں کسی طرح کا کوئی نمونہ موجود ہے تو اس کا مشاہدہ کیا جاسکتا ہے۔ آپ اعلی جماعتوں میں اس کے بارے میں اور زیادہ مطالعہ کریں گے۔ غير شفاف کلیدی الفاظ سخت غیرمل پذي چک کھردری حل په نیم شفاف شفاف دھاتیں خلاصه ه ہمارے اطراف میں موجود اشیا متعدشم کے مادوں سے بنی ہیں۔ : کسی دیئے ہوئے مادہ کا استعال بہت سی اشیا بنانے میں کیا جاتا ہے۔ یہ بھی ممکن تم کے مادے سے بنی ہو یا پھرمختلف قسم کے مادوں سے۔ ہے کہ کوئی چیز صرف ایک ہی 38 سائنس : : مختلف تم کے مادوں کی خصوصیات مختلف ہوتی ہیں۔ کچھ مادے چکدار ہوتے ہیں جبکہ کچھ مادوں میں چک نہیں ہوتی۔ کچھ چکنے ہوتے ہیں تو کچھ کھردرے ہوتے ہیں۔ اسی طرح کچھ مادے خت ہوتے ہیں اور دیگر چھ مادے ملائم ہوتے ہیں۔ کچھ مادے پانی میں حل پذیر ہوتے ہیں جبکہ کچھ غیرعل پذیر ہوتے ہیں۔ کا جیسے کچھ مادے شفاف ہوتے ہیں اور لکڑی جیسے کچھ دوسرے مادے غیر شفاف ہوتے ہیں۔ کچھ مادے نیم شفاف ہوتے ہیں۔ مادوں کی گروپ بندی ان کی خصوصیات میں یکسانیت اور فرق کی بنیاد پر کی جاتی ہے۔ چیزوں کی گروپ بندی سہولت کے لیے اور ان کی خصوصیات کے مطالعہ کی غرض سے کی جاتی ہے۔ : مشقیں ۔ 2۔ ۔ پانچ ایسی اشیا کے نام لکھے جنھیں لکڑی سے بنایا جاسکتا ہے۔ مندرجہ ذیل میں سے ان اشیا کو تب تھے جو پکدار ہوتی ہیں ۔ کانچ کا کلورا پلاسٹک کا کھلونا، اسٹیل کا چپہ سوتی میں مندرجہ ذیل اشیا کا لان ان مادوں سے پیچھے جن سے ہی اشیا بنائی جاسکتی ہیں۔ یاد رکھے کہ کسی چیز کو ایک سے زیادہ مادوں کا استعمال کر کے بتایا جا سکتا ہے اور دیتے ہوئے کسی مادے کا استعمال کی اشیا بنانے میں کیا جا سکتا ہے۔ اشيا مادے كا کاغذ | جوتے ۔ | برتن لکڑی | کرسی کھلون چھڑا پلاسٹک بتایئے کہ مندرجہ ذیل بیانات میں ہیں یا غلط 0 پر شفاف ہے جبکہ کانچ غیر شفاف ہے۔ (1) کاپی میں چیک ہوتی ہے، جبکہ دیر میں چیک نہیں ہوتی۔ (1) پاک پانی میں حل پذیر ہے۔ (iv) لکڑی کا ٹکڑا پانی پر تیر جاتا ہے۔ not to اشیا کو گروپوں میں چھانٹنا 39 5۔ (9) چینی پانی میں حل پذیر نہیں ہے۔ vi تیل، پانی میں حل پذیر ہے۔ (V) ریت پانی میں نیچے بیٹھ جاتی ہے۔ (v) سرکا پانی میں حل ہوجاتا ہے۔ مندرجہ ذیل میں کچھ اشیا اور مادوں کے نام دیئے گئے ہیں: پانی، باسکٹ بال سنتر چینی ، گلوب ، سیب اور مٹی کا گھڑا مندرجہ ذیل کے تحت ان کی گروپ بندی کیجیے۔ (a) گول شکل والے اور دیگر شکل والے (b خوردنی اور غیر خوردنی پانی میں تیرنے والی ان بھی چیزوں کی فہرست بنائے جنھیں آپ جانتے ہیں۔ جان کر کے دیکھیے کہ آیا وہ چیزیں تیل یا مٹی کے تیل میں تیرتی ہیں یا نہیں۔ مندرجہ ذیل ہر ایک میں اس شے کی نشاندہی بچھے جو گروپ سے تعلق نہیں ہے۔ a) کری، پینگ، میز، په الماری b گلاب ملی ، شنی، گیندہ کمل ، ایلینیم، لوہا، تانبہ، چاندی، ریت d چینی ،نمک، ریت، کاپر سلفیٹ ۔ 7۔ ه ه ه ه مجوز عملی کام 1۔ ہوسکتا ہے آپ نے اپنے دوست کے ساتھ ذہانت کا کوئی کھیل کھلا ہو۔ میز پرمختلف قسم کی چیزیں رکھی ہوئی ہیں۔ آپ سے کہا جاتا ہے کہ آپ کچھ منٹوں تک ان کا مشاہدہ کبھی کسی دوسرے کمرے میں جایئے اور ان سب چیزوں کے نام لکھے جنھیں آپ یاد کر سکتے ہیں۔ اس کھیل کو ذرا مختلف طریقے سے کھیلے۔ کھیل کے بھی شرکا سے کہے کہ جب وہ بیہ کھیل کھیلیں تو کسی مخصوص صنف والی اشیا کو یاد کریں۔ یاد کیجیے اور ان اشیا کے نام لکھے جو لکڑی سے بنی ہیں اور وہ اشیا جوخور دیتی ہیں۔ ہے نہ مزیدار۔ 2۔ اشیا کے کسی بڑے مجموعے میں، شفافیت، پانی میں حل پذیری اور دیگر خصوصیات کی بنیاد پر اشیا کے گروپ بنایئے۔ بعد کے اسباق میں آپ برق اور مقناطیسیت سے متعلق اشیا کی خصوصیات کے بارے میں سیکھیں گے۔ جمع کی گئی اشیا کے مختلف گروپ تشکیل دینے کے بعد یہ جانے کی کوشش ھے کہ کیا ان گروپوں میں کسی ستم کا پیٹرن موجود ہے۔ مثال کے طور پر کیا وہ بھی اشیا جو پچکدار ہیں، بجلی کا ایصال کرتی ہیں؟ 40 لائن

RELOAD if chapter isn't visible.