ہ ریوں سے کپڑوں تک (Fibre to Fabric) اور بوجھو نے اپنے اسکول میں منعقد ہونے م / والے سائنس کوئز مقابلے میں اول انعام و حاصل کیا ہے۔ وہ بہت خوش تھے اور انھوں نے طے کیا کہ انعام کی رقم سے وہ اپنے والدین کے لیے کپڑے خریدیں گے۔ جب انھوں نے کپڑے کی بہت زیادہ میں دیکھیں تو وہ سوچ میں پڑ گئے (شکل 3 . 1)۔ دکاندار نے بتایا کہ کچھ کپڑے سوتی ہیں جبکہ کچھ تالیفی (Synthetic) ہیں۔ اس کے پاس اونی مفلر اور شال بھی تھیں۔ وہاں بہت سی ریشمی ساڑیاں بھی تھیں۔ پہیلی اور بوجھو کو بڑا مزہ آرہا تھا۔ انھوں نے ان کپڑوں کو چھو کر دیکھا۔ آخر کار انھوں د ا نے ایک اونی مفلر اور ایک سوتی ساڑی ز ز مفل. ت ب خریدی۔ کپڑے کی دکان سے واپس آ کر بیٹی اور بوجھو نے اپنے اطراف میں پائے جانے والے مختلف سم کے کپڑوں کا جائزہ لینا شروع کیا۔ انھوں نے پایا کہ چادر، بیل، پردے ، میز پیش، تولیے اور صافی وغیرہ مختلف نسم کے کپڑوں سے بنے ہوئے تھے۔ ان کے اسکول بیگ اور اناج کے بورے بھی ایک مخصوص قسم کے کپڑے سے بنے تھے۔ انھوں نے ان کی شناخت سوتی، اونی اور تالیفی کپڑوں کے تحت کرنے کی کوشش کی ۔ کیا آپ بھی کچھ کپڑوں کی شناخت کر سکتے ہیں؟ شكل 3 . 1 کپڑے کی دکان 3 . 1 کپڑوں کی اقسام (BaDC (variety of Fabrics عملی کام 1 کسی نزر کی درزی کی دکان پر جائے ۔ سلائی کے بغیر پکی ہوئی 1 کتنوں کو جمع کیجیے۔ ہر ایک نشم کی کترن کو چھو کر محسوس کیے۔ اب ان کی نشاندہی سوتی، ریشی اور تالیفی کپڑوں کے تحت کیجیے۔ شكل 3 . 2 کپڑے کی کترن اس کے لیے آپ درزی کی مدد کی تکبیری شکل لے سکتے ہیں۔ کے ایک سرے کو اپنے انگوٹھے سے دبانے اور دوسرے سرے کو دھاگے کی لمبائی میں ناخن کی مدد سے کھرچھے جیسا کہ شکل 3 . 4 میں دکھایا گیا ہے۔ کیا آپ دیکھتے ہیں کہ اس سرے پر یہ دھاگا بار یک نکڑوں میں ٹوٹ جاتا ہے (شکل 3 . 5)؟ کیا آپ کو اس بات پر حیرت ہوتی ہے کہ مختلف قسم کے کپڑے کس چیز سے بنے ہیں؟ جب آپ کسی کپڑے کو دیکھتے ہیں تو یہ ایک ہی تگڑا نظر آتا ہے۔ اب اسے ذرا قریب سے دیکھیے ۔ آپ نے کیا پایا (شکل 3 . 2)؟ عملی کام2 اس کترن کومنتخب کیے جس کی نشاندہی آپ نے عملی کام 1 سوتی کپڑے کے طور پر کی تھی۔ اب کنارے پر باہر نکلے ہوئے کسی دھاگے کو تلاش کیجیے اور اسے باہر کھینچے (شکل 3 . 3)۔ اگر دھاگے نظر آ رہے ہیں تو آپ انہیں کسی پین یا سوئی کی مدد سے باآسانی حج سکتے ہیں۔ شکل 3 . 4 دھاگے کو باريك لڑیوں میں تقسیم کرنا شکل 3 . 3 کپڑے سے کوئی دھاگا یا ریشه کھینچنا ہم دیکھتے ہیں کہ کپڑے دھاگوں کو ایک ساتھ ملا کر بنائے جاتے ہیں۔ یہ دھاگے کس چیز سے بنے ہوتے ہیں؟ شکل 3 . 5 دهاگا باريك لڑیوں میں تقسیم هوجاتا هے۔ شاید آپ نے اس ستم کا مشاہدہ سوئی میں دھاگا ڈالتے ہوئے کیا ہوگا ۔ بعض مرتبہ دھاگے کا سرا کئی بار یک سروں میں تقسیم ہو جاتا ہے۔ اس کی وجہ سے دھاگے کو سوئی میں سے گزار انا مشکل ہوجاتا ہے۔ دھاگے کے رہیں گ ے جو ہمیں نظر آتے ہیں وہ بھی اور باریک دھاگوں سے بنے ہوتے ہیں جنہیں ریشے کہتے ہیں۔ کپڑے دھاگوں سے بنے ہوتے ہیں اور دھاگے ریشوں سے بنے ہوتے ہیں۔ یہ ریشے کہاں سے آتے ہیں؟ کچھ کپڑوں کے ریشے مثلا کپاس، جوٹ، ریم اور اون وغیرہ پودوں اور جانوروں سے حاصل ہوتے ہیں۔ یہ قدرتی ریشے (Natural Fibres) کہلاتے ہیں۔ کپاس اور 3 . 2 رژ (Fibre) عملی کام 3 سوتی کپڑے کے کسی مکڑے سے ایک دھاگا کھینچ کر باہر نکالیے۔ اس دھاگے کو میز کے اوپر رکھ دیے۔ اس دھاگے ریشوں سے کپڑوں تک 23 جوٹ پودوں سے حاصل ہونے والے ریشوں کی مثالیں ہیں؟ کپاس کے ان ریشوں کا استعمال، گدوں، تکیوں اور ہیں۔ ریشم اور ان کے ریشے جانوروں سے حاصل ہوتے لیاف وغیرہ میں بھرنے میں کیا جاتا ہے۔ کچھ روئی لے، اسے ہیں۔ اون بھیڑ یا بکری کے روؤں سے حاصل ہوتی ہے۔ بچے اور اس کے کناروں کو دیکھیے۔ آپ کا مشاہدہ کرتے اسے یاک، اونٹ اور خرگوش کے بالوں سے بھی حاصل کیا ہیں؟ آپ کو جو چھوٹے اور باریک دھاگے نظر آرہے ہیں وہ جاتا ہے۔ ریشم کے ریشوں کو ریشم کے کپڑوں کے کون سے کپاس کے ریشوں سے بنے ہیں۔ حاصل کرتے ہیں۔ و بیرونی کہاں سے آتی ہے؟ اسے کھیتوں میں آ گایا جاتا ہزاروں سال سے صرف قدرتی ریشے ہی کپڑے ہے۔ کپاس کی کھیتی ان علاقوں میں کی جاتی ہے جہاں کی مٹی بنانے کے لیے دستیاب تھے۔ گذشتہ سو برسوں میں الیس کالی اور آب و ہوا گرم ہوتی ہے۔ کیا آپ ہمارے ملک کی کیمیائی اشیا سے بھی ریشے بنائے گئے جو کہ کسی نباتاتی یا ان ریاستوں کے نام بتا سکتے ہیں جہاں کپاس کی کھیتی کی جاتی حیوانی ذریعے سے حاصل نہیں کی جاتی تھیں۔ یہ تامینی ریشے ہے؟ کیاس کے پودوں (Cotton Bolls) پر لگنے والے (Synthetic Fibres) کہلاتے ہیں۔ پالسٹر، نائلون اور چل تقریبا نیبو کے سائز کے ہوتے ہیں۔ پکنے کے بعد یہ الیکٹرانک تالیفی ریشوں کی کچھ مثالیں ہیں۔ Bolls پھٹ جاتی ہیں اور کپاس کے ریشوں میں لپٹے ہوئے نہ نظر آنے لگتے ہیں۔ کیا کبھی آپ نے کپاس کے ایسے ها بوجھو نے میوزیم میں ایک ایسی چیز د ی کھیت دیکھے ہیں جو کپاس فراہم کرنے کے لیے تیار ہیں؟ یہ ہے یہاں دکھایا گیا ہے۔ اسے فوج کے کھیت اس طرح نظر آتے ہیں جیسے کہ برف سے ڈھکے ہوں سپاہی پہنتے تھے۔ وہ جاننا چاہتا ہے کہ پ ) (شکل 3 . 6)۔ ا کس قسم کے کپڑے سے بنا ہے؟ ای " سرد و 3 . 3 کچھ نباتاتی ریشے (SomePlant Plbres) کپاس (Cotton) | کیا کبھی آپ نے مٹی کے تیل کے لیپ کی بق بنائی ہے؟ آپ ان بیوں کو بنانے کے لیے کس چیز کا استعال کرتے شکل 3 . 6 کپاس کے پودوں کا کھیت 24 لاتنس کاٹنے کے بعد پودوں کو کچھ دنوں کے لیے پانی میں ڈبو دیا جاتا ہے۔ تنے پڑ جاتے ہیں اور ریشوں کو ہاتھ سے علیحدہ و منGom ان Bolls سے کپاس کو عموما ہاتھوں کی مدد سے علیحده کیا جاتا ہے۔ ریشوں کو بیجوں سے Combing کے ذریعے حاصل کیا جاتا ہے۔ اس عمل کو نبولے نکالنا (Ginning کہتے ہیں۔ نبولے نکالنے کا کام ہاتھوں کی مدد سے انجام دیا جاتا تھا (شکل 3 . 7)۔ آج کل یہ کام مشینوں کے ذریعے کیا جاتا ہے۔ کر لیتے ہیں۔ تامین و کانی وه شكل 3 . 7 کپاس کی گننگ (اوٹائی) شكل 3 . 9 روئی سے دھاگابنانا کپڑے بنانے کے لیے ان ریشوں کو پہلے دھاگوں میں تبدیل کیا جاتا ہے یہ کام کس طرح انجام دیا جاتا ہے؟ 3 . 4 کپاس کے دھاگوں کی کتانی (Spinning Cotton Yarn) جھوٹ (Jute) جوٹ کے ریشے جوٹ کے پودے کے سینے سے حاصل کیے جاتے ہیں (شکل 3 . 8)۔ ان کی کاشت برسات کے دنوں میں کی جاتی ہے۔ ہندوستان میں جوٹ کی کاشت خاص طور سے مغربی بنگال، بہار اور آسام میں کی جاتی ہے۔ جوٹ کے پودے کی کٹائی اس وقت کی جاتی ہے جب اس پر پھول آجاتے ہیں۔ شكل 3 . 8 جوٹ کا پودا آپ خود کپاس کے دھاگے بنانے کی کوشش کیجیے۔ عملی کام 4 اپنے ایک ہاتھ میں تھوڑی سی روئی لیچھے۔ تھوڑی سی روئی کو اپنے انگوٹھے اور شہادت کی انگلی کے درمیان میں دبائے۔ اب روئی کو آہستہ آہستہ انٹتے ہوئے کھینچنا شروع کیے شکل (3 . 9)۔ کیا آپ دھاگا بنا سکتے ہیں؟ ریشوں سے دھاگوں کو بنانے کا عمل کتانی کہلاتا ہے۔ اس عمل میں روئی کے گولے سے ریشوں کو کھینچتے ہیں اور اینٹھتے ریشوں سے کپڑوں تک 25 3 . 5 دھاگوں سے کپڑے (Yarn to Fabric) دھاگوں سے کپڑے بنانے کے کئی طریقے ہیں۔ کپڑے بنانے کے دو خاص طریقے بنائی (Weaving) اور میٹنگ (Knitting) ہیں۔ (Weaving Ba جاتے ہیں۔ اس سے ریشے ایک دوسرے کے ساتھ مل کر دھاگے کی تشکیل کرتے ہیں۔ ہاتھ کی تکی (Hand Spindle) کتائی کے لیے استعال کیا جانے والا ایک ساده آلہ ہے (شکل 3 . 10)۔ کتائی کے لیے ہاتھ سے چلایا جانے والا ایک اور آلہ بھی ہے جسے چڑنا کہتے ہیں (شکل 3 . 11)۔ آزادی کی تحریک کے دوران گاندھی جی کے ذریعے چرغے کو بہت شہرت ملی تھی۔ انھوں نے لوگوں کی اس بات کی ترغیب دی تھی کہ وہ ہاتھ کے کتے ہوئے دھاگوں سے بنے کپڑوں کو پانہیں اور برطانوی ملوں میں بنائے گئے درآمد شدہ شک کپڑوں کا بائیکاٹ کریں۔ نکلی بڑے پانے پر کمائی کا کام مشینوں کی مدد سے انجام دیا جاتا ہے۔ کتائی کے بعد دھاگوں کا استعمال کپڑے بنانے میں کیا جاتا ہے۔ . ب : شكل 3 . 10 عملی کام 2 میں شاید آپ نے نوٹ کیا ہوگا کہ کپڑا دھاگے کو دو سیٹ کو ایک دوسرے کے ساتھ ترتیب دے کر بنایا گیا ہے۔ کپڑا بنانے کے لیے دھاگوں کے دو سیٹ کو ایک دوسرے کے ساتھ ترتیب دینے کا عمل بنائی کہلاتا ہے۔ آیئے کچھ کاغذ کی پٹیوں کو بنے کی کوشش کرتے ہیں۔ عملی کام 5 مختلف رنگوں کی کاغذ کی دوشیٹ لیجیے۔ ہر ایک شیٹ سے 30cm لمبائی اور چوڑائی کے مربع نما مکڑے کاٹ لیے۔ اب، دونوں شیٹ کونصف حصوں میں موڑ لیے۔ ان میں سے ایک شیٹ پرشکل (a) 3 . 12 کے مطابق لاسنیں کھینچنے اور دوسری شیٹ پر شکل (b 3 . 12 کے مطابق لائیں کھنچے۔ دونوں شیٹ کو ان راستوں کی سمت میں کاٹ لینے اور کھول لیے۔ پٹیوں کو یکے بعد دیگر شیٹ کے کئے ہوئے حصوں میں بن پیسے جمیا که شکل (c) 3 . 12 میں دکھایا گیا ہے۔ بھائی کے بعد حاصل ہونے والے نمونے کوشگل (a) 3 . 12 میں دکھایا گیا ہے۔ کپڑا بنانے کے لیے دھاگوں کے دو سیٹ کو بالکل اسی انداز میں بنا جاتا ہے۔ دھاگے ہماری کاغذ کی پٹیوں کے شکل 3 . 11 چرخا 26 سائنس (b) (a) (6) شکل 3 . 12 کاغذ کی پٹیوں سے بنائی مقابلے بہت باریک ہوتے ہیں۔ کپڑوں کی بنائی کا کام کیا ہوتا ہے؟ صرف ایک دھاگا مسلسل طور پر کھینچتا چلا آتا کرگوں (Looms) میں انجام دیا جاتا ہے (شکل 3 . 13)۔ ہے اور کپڑا ادھڑ جاتا ہے۔ موزے اور دیگر بہت سے کپڑے کرگوں کو یا تو ہاتھوں سے چلاتے ہیں یا پھر بجلی سے چلایا Knitted Fabrics کے بنے ہوتے ہیں۔ سوئیٹر بنے کا جاتا ہے۔ عمل ہاتھ اور مشین دونوں کے ذریعے انجام دیا جاتا ہے۔ ج مال ه ه ه ه ه ه ه ه ه ه ه ه ه شکل 3 . 14 سویٹر بننا = = = = = = = شكل 3 . 13 هینڈلوم بھائی (Knitting)| کیا آپ نے دیکھا ہے کہ سوئیٹرکس طرح بن جاتے ہیں؟ بنائی کے عمل میں کپڑے کا ایک مکڑا بنانے کے لیے صرف ایک دعا کا استعمال میں لایا جاتا ہے (شکل 3 . 14 )۔ کیا کبھی آپ نے کسی پرانے موزے سے کوئی دھاگا سچ کر باہر نکالا ہے؟ کیا جانا جاتا ہے کہ کیا آپ نے اسے پٹرے رکھے ہیں کچھ ناریل کے پر دن تھے میرا پائے جانے والے ریشوں سے بنائے گی اول۔ اس کے کپڑوں کا استال عام طور ا ن کے لیے کیا جاتا ہے؟ ر ا ریشوں سے کپڑوں تک 27 Weavingاور Kniting کا استعمال مختلف تنم کے کپڑے بنانے میں کیا جاتا ہے جن سے متعددم کے کپڑے بنائے جاتے ہیں۔ 3 . 6 کپڑا بنانے کے مادوں کی تاریخ History of Clothing Material) کیا آپ نے بھی یہ جانے کی کوشش کی ہے کہ پرانے زمانے میں لوگ کپڑے بنانے کے لیے کون کون سے مادوں کا استعمال کیا کرتے تھے؟ یہ معلوم ہوا ہے کہ اس زمانے میں لوگ اپنے جسم کو ڈھکنے کے لیے درختوں کی چھال اور بڑی بڑی پٹیوں یا جانوروں کی کھال اور فر کا استعمال کرتے تھے۔ جب لوگوں نے زراعتی فرقوں کی شکل میں سکونت اختیار کر لی تو وہ درختوں کی شاخ اور گھاس سے چٹائیاں اور ٹوکریاں بنے کا طریقہ سیکھ گئے۔ وائنس (Vines)، جانوروں کے روؤں اور بالوں کو ایک دوسرے کے ساتھ مروڑ کر بے دھاگے بنائے جاتے تھے۔ ان سے کپڑے بنے جاتے تھے۔ قدیم ہندوستانی لوگ گنگا کے نزدیکی علاقوں میں پیدا ہونے والی کپاس سے بنے ہوئے کپڑے پہنتے تھے۔ سن (Flax بھی ایک ایانی پودا ہے جس سے قدرتی ریشے حاصل ہوتے ہیں۔ قدیم مصر میں دریائے نیل کے آس پاس کپاس اورسن کی کاشت ہوتی تھی اور ان کا استعمال کپڑے بنانے میں کیا جاتا تھا۔ ان دونوں سلائی کے بارے میں کسی کو علم نہیں تھا۔ لوگ کپڑوں کو اپنے جسم کے مختلف حصوں پر لپیٹ لیتے تھے۔ کپڑوں کو لپیٹنے کے مختلف طریقے استعمال میں لائے جاتے تھے۔ سلائی کرنے والی سوئی کی ایجاد کے بعد لوگوں نے دھاگوں سے کپڑے سینے کا کام شروع کر دیا۔ اس ایجاد کے وقت سے اب تک سلے ہوئے کپڑوں میں مختلف تبدیلیاں آ چکی ہیں۔ لیکن ساڑی، دعوتی، تہہ بند اور پگڑی کا استعال آج بھی بغیر سلے ہوئے کپڑے کے طور پر کیا جاتا ہے۔ جس طرح سے ہمارے ملک میں مختلف اقسام کی غذائیں استعمال کی جاتی ہیں اس طرح کپڑوں کی بھی بہت زیادہ میں موجود ہیں۔ کلیدی الفاظ فوٹہ : ق و 28 فاتن خلاصه کپڑا دھاگوں سے بنایا جاتا ہے اور دھاگے ریشوں سے بنائے جاتے ہیں۔ : ریشے یا تو قدرتی ہوتے ہیں یا پھر تالیفی ۔ کپاس، اون، ریشم اور جھوٹ قدرتی ریشے ہیں جبکہ نائکون اور پالسٹری تالیفی ریشوں کی مثالیں میں۔ : کپاس اور جوٹ جیسے ریشے پودوں سے حاصل ہوتے ہیں۔ : ریشوں سے دھاگا بنانے کا طریقہ کتائی کہلاتا ہے۔ : وهاگوں سے کپڑا بنانے کے دو طریقے ہیں۔ Weavingاور Knitting 1۔ 2۔ | مشقیں ص مندرج ذیل ریشوں کی درجہ بندی قدرتی اور تالیفی ریشوں کے تحت کیسے نا ملون، اون، کپاس، ریشم، پاسٹر، جوٹ بتایئے کہ مندرجہ ذیل بیاناتی ہیں یا غلط a) وھاگے ریشوں سے بنائے جاتے ہیں۔ b کتانی، ریشے بنانے کا عمل ہے۔ جوٹ ناریل کا بیرونی خول ہوتا ہے۔ d) کپاس سے بچوں کو علیحدہ کرنے کامل نبولے نکالنا کہلاتا ہے۔ e) دھاگوں کی بنائی سے کپڑے کا کڑا تیار کیا جاتا ہے۔ f) ریشم کے ریشے پودے کے تنے سے حاصل کیے جاتے ہیں۔ یا پاسٹر ایک قدرتی ریشہ ہے۔ خالی نہیں پر کیے a) نباتاتی ریشے........................اور........................ سے حاصل ہوتے ہیں۔ b ................... اور حیوانی ریشے ہیں۔ پردے کے کن حصوں سے کپاس اور جھوٹ حاصل ہوتی ہے؟ اسی دو چیزوں کے نام بتائے جو کہ ناریل کے ریٹوں سے بنائی جاتی ہیں۔ ریشے سے دھاگا بنانے کا طریقہ بیان کیے۔ 3۔ OOOU ۔ 5۔ 6۔ ریشوں سے کپڑوں تک 29 مجوزہ پروجیکٹ اور عملی کام 1۔ کسی نزدیکی ہیڈ لوم با پاور لوم پر جایئے اور کپڑوں کی بنائی اور Kniting کا مشاہدہ کیجیے۔ ۔ اپنے علاقے میں کسی ایسی فصل کے بارے میں پتہ لگائے جس سے ریشے حاصل کیے جاتے ہیں۔ ان کا استعمال کس مقصد کے لیے کیا جاتا ہے؟ 3۔ ہندوستان کپاس اور سوتی کپڑوں کا ایک اہم پروڈیوسر بن چکا ہے۔ ہندوستان سے سوتی کپڑے اور دیگر مصنوعات دوسرے ممالک کو برآمد کیا جاتا ہے۔ پتہ لگایئے کہ اس سے ہمیں کیا مددیتی ہے؟ ۔ کیا آپ کو معلوم ہے کہ مشہور صوفی سنت اور شاعر کبیر ایک بکر تھے؟ ان کی زندگی اور تعلیمات کے بارے میں جانکاری حاصل ھے۔ 5۔ آپ اپنے استادمحترم با والدین کی نگرانی میں کپڑے کے دھاگوں کی شناخت کے عمل کو انجام دے سکتے ہیں۔ کسی کپڑے سے چھ سے آٹھ دھاگے میچ کر باہر نکا لیے۔ دھاگے کے ایک سرے کو پیٹی کی مدد سے پڑھے اور دوسرے سرے کو موم بتی کی لو کے اوپر رکھے۔ غور سے مشاہدہ کیجیے۔ کیا دھاگا سکڑ کر لو سے دور ہو جاتا ہے؟ کیا دھاگا پھل جاتا ہے یا مل جاتا ہے؟ اس سے کس قسم کی بو آتی ہے؟ اپنے مشاہدات کو نوٹ کیے۔ اگر یہ کہ اس کے دھاگے ہیں، تو یہ جل جاتے ہیں، پچھلے باسکٹتے نہیں ہیں۔ جلتے ہوئے دھاگوں سے کاغذ کے جلنے جیسی بو آتی ہے۔ ریشم کا دھاگا سکڑ کر لو سے دور ہو جاتا ہے اور جل جاتا ہے لیکن کھانا نہیں ہے۔ اس میں سے بال کے جلے جیسی بو آتی ہے۔ تالیفی دھاگے سکڑ جاتے ہیں اور جل جاتے ہیں۔ یہ پھلتے بھی ہیں اور پلاسٹک کے جلنے ہی بو پیدا کرتے ہیں۔ و بانو جانتا ہے کہ کپاس کے دھاگے چلا کے دوران کار کے پولی و پیدا کرتے ہیں۔ وہ جانا جاتا ہے کہ کیا وہ بیر با لے کر کائی وروں سے بنایا را . . 30 فاتن

RELOAD if chapter isn't visible.